کیا ستم ہے کہ اب تیری صورت غور کرنے پہ یاد آتی ہے

Leave a comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *